امریکی صدر کا مودی کے بعد وزیراعظم عمران خان سے بھی رابطہ

امریکی صدر کا مودی کے بعد وزیراعظم عمران خان سے بھی رابطہ

ڈونلڈ ٹرمپ نے وزیراعظم کو بھارتی وزیراعظم کے ساتھ ہوئی گفتگو سے متعلق آگاہ کیا، پاکستان نے مقبوضہ کشمیر سے فوری کرفیو ختم کرنے کا مطالبہ کر دیا

امریکی صدر کا مودی کے بعد وزیراعظم عمران خان سے بھی رابطہ، ڈونلڈ ٹرمپ نے وزیراعظم کو بھارتی وزیراعظم کے ساتھ ہوئی گفتگو سے متعلق آگاہ کیا، پاکستان نے مقبوضہ کشمیر سے فوری کرفیو ختم کرنے کا مطالبہ کر دیا۔ تفصیلات کے مطابق وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے بتایا ہے کہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ اور وزیراعظم عمران خان کے درمیان ایک مرتبہ پھر سے رابطہ ہوا ہے۔وزیر خارجہ نے بتایا ہے کہ وزیراعظم عمران خان کو امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے نریندر مودیسے رابطے کے بعد ٹیلی فون کیا۔ رابطے کے دوران دونوں رہنماوں کے درمیان تفصیلی گفتگو ہوئی۔ وزیراعظم نےامریکی صدرکواس بحران کا حل نکالنے کا کہا ہے۔

مقبوضہ وادی میں کرفیو جلد ہٹایا جائے اور تشویشناک صورت حال کے پیش نظر مقبوضہ وادی میں یو این مبصرمشن بھیجےجائیں۔

وزیراعظم نےصدرٹرمپ کوبتایا مقبوضہ وادی میں کرفیوکو15 دن ہوچکے ہیں جس باعث شدید انسانی بحران پیدا ہوچکا ہے۔ بھارتی اقدام کے پیچھے کشمیرمیں آبادی کا تناسب تبدیل کرناتھا۔ وزیراعظم نے ڈونلڈٹرمپ کو بتایا کہ یہ بھارت کا یک طرفہ اقدام تھا۔وزیراعظم نے کہا کہ5 اگست کے اقدامات سےخطے میں سنگین صورت حال پیداہوئی۔ دوسری جانب میڈیا رپورٹس میں بتایا جا رہا ہے کہ بھارتی وزیراعظمنریندر مودی امریکی دباو پر پاکستان کے ساتھ مذاکرات کرنے کیلئے تیار ہو گیا ہے۔ پیر کے روز امریکی صدر کا بھارتی وزیراعظم سے ٹیلی فونک رابطہ ہوا اور دونوں رہنماوں کے درمیان 30 منٹ طویل گفتگو ہوئی۔بتایا گیا ہے کہ رابطے کے دوران بھارتی وزیراعظم نریندر مودی نے وزیراعظم پاکستان عمران خان پر الزامات عائد کیے اور ان کی شکایتیں کیں۔ اس موقع پرامریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے نریندر مودی کو تلقین کی کہ مسئلہ کشمیر کو مذاکرات کے ذریعے اور پرامن طریقے سے حل کرنے کی کوشش کی جائے۔ امریکی صدرڈونلڈ ٹرمپ کی جانب سے نریندر مودی پر تمام مسائل مذاکرات کے ذریعے حل کرنے کر زور دیا گیا جس کے بعد بھارتی وزیراعظم نے یقین دلایا کہ وہ امن کے قیام کیلئے اور حالات کی بہتری کیلئے کسی سے بھی مذاکرات کرنے کیلئے تیار ہیں۔واضح رہے کہ مقبوضہ کشمیر کی خود مختار حیثیت ختم کیے جانے کے بعد بھارت پاکستان کو مسلسل جنگ اور جارحیت کی دھمکیاں دے رہا ہے۔ تاہم اب امریکیصدر کی جانب سے دباو ڈالے جانے کے بعد بھارتی قیادت کی ساری اکڑ نکل گئی ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں